imagesxczsc
کرکٹ ایک ایسا کھیل ہے جس میں آخری بال اور آخری گیند تک کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہوتا ہے اور جب بات ہو عالمی میلے کرکٹ ورلڈکپ کی تو اس کی تو بات ہی کچھ اور ہے کیونکہ دنیا میں عالمی کپ کا شائقین کو 4 سال تک انتظار کرنا پڑتا ہے اور جیسے جیسے وڑلڈکپ کے دن قریب آجاتے ہیں ویسے ہی دنیائے شائقین میں کرکٹ کا جوش سر چڑ کر بولتا ہے اور ہر گلی چوراہوں پر کرکٹ کھیلتے ہو? نوجوان نظر آتے ہیں کوئی نوجوان شاہد آفریدی کی طرح کھیلنا چاہتا ہے یاگیل کی طرح زور ہٹس مارنا چاہتا ہے اور یا پھر ڈی ویلیرز کی طرح بال کو گراو¿نڈ کے چاروں طرف پھیکنا چاہتا ہے . عالمی میلہ چند روز میں سجنے والا ہے جس 14 ٹیمیں شرکت کرینگی اور وڑلڈکپ 2015 کے شروع ہونے سے قبل ٹیموں کو وارم کرنے اور ماحول میں ایڈجسٹ اور پریکٹس کے لیے وارم اپ میچز جاری ہیں. عالمی میلے میں سب سے زیادہ عوام کی توجہ کا مرکز وہ کھلاڑی ہوتے ہیں جو جارحانہ انداز سے بیٹنگ کرتے ہو یا پھر کوئی ریکارڈ بریکر کھلاڑی ہو یوں تو ریکارڈ بنتا ہی ٹوٹنے کے لیے ہے مگر کرکٹ ورلڈکپ میں بننے والے ریکارڈز ایک اپنی علیحدہ حیثیت رکھتے ہیں جس سے کھلاڑیوں کو اپنے آپ کو منوانے کا بہترین موقع ملتا ہے . عالمی کرکٹ وڑلڈکپ 2015 میں بہت سے ریکارڈ بریکر کھلاڑی حصہ لینے جارہے ہیں جس میں سرفہرست ہے گزشتہ ماہ بننے والا تیز ترین نصف سنچری اور سنچری ہے اور اس کے اعلاوہ دیگر ریکارڈز ہیں اور سابقہ ریکارڈز توڑنے اور نئے ریکارڈز قائم کرنے کے لیے ہر کھلاڑی پر عزم ہے .چند ریکارڈ بریکرز کا میں واضح زکر عوام تک پہنچانا چاہتا ہوں تاکہ آپکو بھی معلوم ہوجائے سابقہ اور موجودہ ریکارڈ بریکر کھلاڑیوں کا جو 2015 کے عالمی وڑلڈکپ میں شرکت کرنے جارہے ہیں

اے بی ڈی ویلیرز ( AB Devilliars ,South Africa)

xsdd
ون ڈے کرکٹ رینکنگ میں نمبر ون بلے باز کی حیثیت سے جنوبی افریقہ کے کپتان ڈی ویلیرز میگا ایونٹ میں ریکارڈ بریکر کھلاڑی کی حیثیت سے شرکت کررہے ہیں ڈی ویلیرز 18 جنوری 2015 کو صرف 44 گیندوں پر 149 رنز کی اننگ کے ساتھ وہ باولرز کے اوپر خوف طاری کرچکے ہیں .اور 2014 میں سب سے بہترین ون ڈے بیٹنگ اوسط کے ساتھ کھیلتے رہے اور گزشتہ ماہ ویسٹ انڈیز کے خلاف اپنی ریکارڈ شکن اننگ میں انہوں نے 16 گیندوں پر نصف اور 31 گیندوں پر سنچری بنا کر تیز ترین سنچری اسکور کرکے نیا ریکارڈ قائم کردیا جس میں انھوں نے 16 چھکے اور 9 چوکے لگاے اور ایک اننگ میں سب سے زیادہ چھکے لگانے کا روہیت شرما کا ریکارڈ برابر کردیا

کوری اینڈرسن (Corey Anderson New Zealand)

indexas

ڈی ویلیرز سے پہلے ون ڈے میں تیز ترین سنچری بنانے کا اعزاز کوری اینڈرسن کے پاس تھا جو اینڈرسن نے 1 جنوری 2014 کو ویسٹ انڈیز کے خلاف 36 گیندوں پر سنچری اسکور کرکے حاصل کیا تھا .کوری انڈرسن نے اپنے تاریخی اننگ میں مجموعی طور پر 47 گیندوں پر ناقابل شکست 131 رنز بناے. نیوزی لینڈ کے نوجوان کھلاڑی کوری انڈرسن توجہ کا مرکز بن سکتے ہیں کیونکہ وڑلڈکپ میں انھیں ہوم گراو¿نڈ کا ایڈوانٹیج حاصل ہوگا

شاہد خان آفریدی ( Shahid Khan Afridi, Pakistan )

imagesdsf

پاکستان کے اسٹار آل راونڈر اپنا آخری وڑلڈکپ کھیلنے جارہے ہیں اور وڑلڈکپ 2015 کے اختیتام پر ریٹائرمنٹ کا اعلان کرچکے ہیں.شاہد خان افریدی بھی ایک ریکارڈ بریکر کھلاڑی کی حیثیت سے میگاایونٹ میں شرکت کررہے ہیں . شاہد افریدی نے 1996 میں میں اپنے دوسرے ون ڈے میں سری لنکا کے خلاف 37 گیندوں پر تیز ترین سنچری اسکور کرکے عالمی ریکارڈ قائم کیا تھا 2013 سے قبل یہ ریکارڈ ٹوٹنا مشکل دکھائی دیتا تھا مگر 2014-15 کی تیز ترین کرکٹ نے ناممکن کو ممکن کردیا پہلے کوری اینڈرسن نے 17 سے قائم شاہد آفریدی کا ریکارڈ توڑا پھر اس کے ایک سال بعد ڈی ویلیرز نے اینڈرسن کا تیز ترین سنچری کا ریکارڈ بریک کیا .شاہد آفریدی پرعزم ہیں کہ وہ اس وڑلڈکپ میں ڈی ویلیرز کا ریکارڈ بریک کرینگے

روہیت شرما (Rohit Sharma ” India )

imagesfffg

بھارت کے ابھرتے نوجوان کھلاڑی بھی عوام کی توجہ کا مرکز ہونگے . سیدھے ہاتھ کے بلے باز روہیت شرما کے لیے 2014 یادگار سال تھا جس میں انھوں نے ایک تاریخی اننگ کھیل کر سب سے بڑی اننگ کا ریکارڈ قائم کیا. روہیت شرما نے سری لنکا کے خلاف 173 گیندوں پر 264 رنز بنا کر تاریخ رقم کردی اور سب سے بڑی انفرادی اننگ کا ریکارڈ اپنے نام کرلیا دیکھنا ہے کہ بھارت کے روہیت شرما اپنی فارم کا تسلسل قائم رک پاگے یا نہیں

کرس گیل ( Chris Gayle , West Indies )

imagesfsfg

ویسٹ انڈیز کے جارحانہ انداز پلیر کرس گیل بھی ریکارڈ بریکر کھلاڑی میں سے ایک ہیں جو وکٹ پر رک جائیں تو حریف ٹیم کے چھکے چھوٹ جاتے ہیں اکیس سنچریز اسکور کرنے والے کرس گیل نے اب تک ون ڈے کی 2 تیز ترین سنچریز اسکور کی ہیں

imagesxsd

یہ تھے چند ریکارڈ بریکرز کھلاڑی جو ماضی کے ریکارڈز بریک کرچکے ہیں مگر وڑلڈکپ 2015 میں کچھ ایسے جارحانہ انداز کھلاڑی بھی شرکت کررہے ہیں جو اپنا پہلا وڑلڈکپ کھیل رہے ہیں اس لیے انکے لیے کچھ بھی کہنا زیادتی ہوگی مگر ابھرتے ہو? نوجوانوں کے لیے یہ کہنا چاہو گا کہ کوئی بھی ریکارڈ ناممکن نہیں کیونکہ ریکارڈز تو ہوتے ہی ٹوٹنے کے لیے ہیں

imagesdsf

Advertisements