پاکستان کو درپیش مسائل اتنے خطرناک ہیں کہ ملک کی سالمیت کو اندرونی و بیرونی عناصر سے خطرہ ہے .ہمارے حکمران پڑوسی ممالک سے پتا نہیں کس مد میں بخشش بٹوررہے ہیں ایسے میں الطاف حسین نے جس طرح حکمرانوں کے چہروں سے نقاب اٹھایا اور فوج کو اپنی ImageImageقوم کی حفاظت کیلئے متوجہ کیا تو حکمرانوں نے ہمیشہ کی طرح اس بار بھی انکی بات کو سجھنے کے بجاے ان پر تنقید کرنا شروع کردی اور آ مریت پسند کے طعنے دینا شروع کردیے..میری ان نادان لوگوں سے گزارش ہے کہ وہ یہ یاد رکھیں ایم کیو ایم ایک جمہوریت پسند جماعت ہے جو ایک باشعور طبقے پر مشتمل ہے جس میں ڈاکڑز انجینیرز  وکلاء  اور دیگر پڑھے لکھے طبقے کی جماعت ہے ایسی باشعور عوام کی جماعت کے قائد کو کچھ کہنے سے پہلے  اپنے گریبانوں میں جھانکیں .الطاف حسین نے اپنے ملک کے دفاع کیلئے اپنی افواج کو متوجہ کیا ہے کیونکہ  یہ حکمراں  ماضی میں بھی کئ مرتبہ بک چکے ہیں جس کا ثبوت اصغر خان کیس کی شکل میں ہمارے سامنے ہے اور افواج پاکستان اپنے سیاسی حکمرانوں کی نیتوں کو جانتی ہے.اور حال ہی میں جس طرح ہمارے کسی پڑوسی ملک نے اتنی بڑی رقم کس مد میں دی ہے.?  کیا یہ اتنی بڑی رقم کسی بڑے مقصد کیلیے  دی گئی ہے یا کوئی  کا م  کرنے کی بخشش دی گئی ہے .الطاف حسین کے خدشات بلکل درست ہیں اور میں سمجھتا ہوں جو الطاف حسین نے اپنی جماعت کے 30 ویں یوم تاسیس پر کہا ہر محب وطن یہ ہی سوچتا ہے الطاف حسین  نے محب وطن پاکستانیوں کی تر جمانی کی ہے .ہمارے  حکمراں اپنی قوم کو کب تک  بے وقوف بناتے رہنگے .? الطاف حسین نے ہمیشہ جمہوریت کو سپورٹ کیا ہے مگر  میں نے انھیں کبھی اپنے ضمیر اور اپنی قوم کا سودا کرتے نہیں دیکھا.

ھمارے حکمران قوم کو بتائیں کہ کونسا ملک ہم سے اتنا ہمدرد ہے جو بلا جواز ہمیں اتنی کثیر رقم دے رہا ہے.? ہم ماضی میں دیکھ چکے ہیں یہ جمہوریت  کے ٹھیکیداروں  نے اپنے ضمیر کو کس طرح کروڑوں ڈالروں کے عوض ایک پڑوسی ملک کو بیچا تھا جس کا خمیازا پاکستان کی عوام دہشت گردی کی شکل میں بھگت رہی اس طرح آج بھی ماضی کو دہرایا  جارہا ہے اور بھاری معاوضے کے عوض ہمارے حکمران ایک بار  پھر اپنی غیرت کو نیلام کرنے جارہے ہیں . یہ جمہوریت  کے ٹھیکیدار آ ج اس انسان پر لان طان کر رہے ہیں جو کبھی بکا نہیں جس نے کبھی ڈکٹیٹرشپ  سے پیسہ نہیں لیا .الطاف حسین نے تو ہمیشہ پاکستان میں جمہوریت  خواہش کی ہے مگر ایسے بکاو جمہوریت کی کبھی خواہش نہ کی اور نہ کبھی کرسکتے ہیں الطاف حسین ایک جمہوری جماعت کے قائد ہیں جس نے ہمیشہ اپنی عوام کیلئے خدمت کو ترجیح دی .ایسے نام نہاد جمہوری ٹھیکیداروں ایم کیو ایم تمہاری اس بکاو جمہوریت کی کبھی خواہ نہیں  رہی ایم کیوایم پاکستان کی اصل جمہوری جماعت ہے جس نے مقل کلاس عام عوام کو اسمبلیوں تک پہنچایا یہ ہے اصل جمہوریت ..جمہوریت کے ٹھیکیداروں ایم کیوایم اور الطاف حسین سے جمہوریت کی کلاس لیں اگر استادوں پر تنقید کرینگے تو کبھی جمہوریت کا سبق حاصل نہیں کر سکے گے …

Advertisements